لندن پلٹ کرونا وائرس کی مریضہ اورخاندان مشکلات کا شکار،کئی ایک ٹیسٹو ں کی مختلف رپورٹس

دینہ(تنویرچوہدری سے)کرونا وائرس سے متاثرہ ماں کو شیرخواربچے سے الگ کردیاگیا،کئی ایک ٹیسٹو ں کی مختلف رپورٹس ،2 سالہ بچی ماں سے دور،محکمہ ہیلتھ نے گھر کے باہر تالا لگادیا،نوبت فاقوں تک آگئی،تفصیلات کے مطابق دینہ کے نواحی علاقہ کی رہائشی لند ن پلٹ خاتون کا پاکستان پہنچتے ہی لیاگیا کرونا ٹیسٹ منفی آیا ،جسے مارگلہ ہوٹل میں 2روز قرنطینہ کردیاگیا جہاں اس کے ٹیسٹ کانتیجہ دوبارہ منفی آنے پر خاتون کو گھر جانے کی اجازت دے دی گئی ۔ گھر پہنچتے ہی محکمہ ہیلتھ جہلم کی ٹیم نے ٹیسٹ سیمپل لیا اورتیسرے دن محکمہ صحت کے عملہ نے ٹیسٹ رپورٹ منفی آنے کی رپورٹ دیتے ہوئے خاتون کو ضروری معائنہ کے لیے ساتھ چلنے کو کہا گیا خاتون کی دوسالہ بچی کو گھر چھوڑدیاگیا ۔ چند روز بعد محکمہ ہیلتھ کی ٹیم نے گھر کے دیگر افرادکے سیمپل لیے گلی میں سپرے کروادیا اورگھر کو باہر سے تالا لگا کر چلے گئے ۔ جس سے گھر میں موجود افرادکونوبت فاقوں تک آگئی ۔ علاقہ بھر میں محکمہ ہیلتھ اورانتظامیہ کی جانب سے خوف و ہراس پیدا کردیاگیا ہے ۔ سنیئر صحافی تنویر چوہدری کے ڈی سی جہلم سے رابطہ کرنے پر ان کا موقف ہے خاتون کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے ، جس بنیاد پر اسے قرنطینہ میں رکھا گیاہے ۔ اہل خانہ آخری وقت تک محکمہ صحت کی جانب سے غلط معلومات دینے پر سراپا احتجاج ہیں ۔ دوسری طرف اہل علاقہ کاکہنا ہے برطانیہ میں رہنے والے اوورسیز پاکستانی سب سے زیادہ امدادبھیجنے والوں میں شامل ہیں اس کے باوجود ان اوورسیز کے ساتھ مجرموں جیسا سلوک مناسب نہیں