واپڈ اہلکاروں کا میٹر نصب کئے بغیر ہزاروں روپے بجلی کے بل کے نام پر جگا ٹیکس

پنڈ دادنخان (رپورٹ ملک ظہیر اعوان)واپڈا سب ڈویژن لِلہ کے افسران اور اہلکاروں نے میٹر نصب کئے بغیر ہزاروں روپے بجلی کے بل کے نام پر جگا ٹیکس وصول کرنے کی دھمکیاں دینا شروع کر دیں اپنی ضد،ہٹ دھرمی اور بدمعاشی پر ڈٹ گئے،لوگوں کو ذہنی ٹارچر کر کے اذیت دی جانے لگی،ایس ڈی او واپڈا سب ڈویژن لِلہ اور ایکسئین بھی عملے کے ہمنوا بن گئے عملے کی نالائقی و نااہلی پر پردہ ڈالنے لگے،شدید احتجاج پر صرف دو ہزار روپے بل کم کر دیا،میں نے نیا میٹر لگوایا ہی نہیں بجلی استعمال ہی نہیں کی نہ ہی کوئی سابقہ بقایا ہے مجھ سے زبردستی بل کیوں وصول کرنا چاہتے ہیں،عدم ادائیگی کی صورت میں دوسرے بل میں بقایا ڈال دیں گے یا پھر میٹر کاٹ دیں گے مجھے ڈرایا دھمکایا جا رہا ہے میرا چیف ایگزیکٹو (آئیسکو) اسلام آباد اور دیگر اعلی حکام سے مطالبہ ہے کہ مجھے انصاف فراہم کیا جائے کہیں بھی شنوائی نہ ہونے کے بعد محمد اسلم ولد خدا بخش ساکن لِلہ بھروانہ اوصاف آفس پہنچ گیا اور بتایا کہ میں نے اپنا میٹر رہائشی تبدیلی کے باعث واپڈا اہلکاروں سے منزطع کرایا جس پر مجھے کہا گیا کہ اب آپ نے صرف میٹر کا رینٹ ادا کرنا ہے کچھ عرصہ بعد اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے واپڈا اہلکاروں نے خود میٹر اتار لیا میرے رابطہ کرنے پر بتایا کہ میٹر خراب ہے اس کے بعد نیا میٹر نصب ہی نہیں کیا اور مجھے ہر ماہ باقاعدگی سے بل بھیج رہے ہیں میرے میٹر نمبر141455-1534300Rکا بل419روپے تھا جو ہم نے جمع کروا دیا اور بجلی منقطع کروا دی لیکن واپڈا والوں نے 5188روپے بل بھیج دیا جب ایس ڈی او کو شکایت کی تو مظہر شاہ نامی شخص نے میٹر ہی اتار لیا اس کے بعد مجھے 9307روپے کا بل بھیج دیا گیا اور نیا میٹر شو کر دیا گیا جبکہ نیا میٹر سرے سے لگایا ہی نہیں ہے میں نے بار بار ایس ڈی او اور ایکسئین کے پاس چکر لگائے اور انھوں نے بل میں کمی کرتے ہوئے 7073روپے کا بل ایک اہلکار کو دیکر بھیجا اور ساتھ ہی دھمکی بھی دی لیکن میں اپنے موقف پر قائم ہوں کہ میں نے نیا میٹر بھی نہیں لگوایا بجلی بھی استعمال نہیں کی پھر واپڈا کے افسران اور اہلکاران مجھ سے زبردستی7073روپے وصول کرنے پر باضد کیوں ہیں ہماری وزیر اعظم عمران خان کے آگے بھی گذارش ہے کہ وہ ہمارا مسئلہ حل کرائیں۔