پاکستان کا ٹمپریچر خطرناک حد تک بڑھ چکا ہے

دینہ(ادریس چودھری)پاکستان کا ٹمپریچر خطرناک حد تک بڑھ چکا ہے یاد رکھیں! اگر آج یہ گرمی ہم سے برداشت نہیں ہورہی تو دس سال بعد ہمارے بچے گلوبل وارمنگ سے ہمارے ہاتھوں میں تڑپ تڑپ کر مر جائیں گے اس کا واحد حل شجرکاری ہے۔ آم، جامن، لیچی، آلو بخارا، سیب، انار، کھجور، کیلا، کینو، انناس وغیرہ جو بھی موسمی پھل آپ خریدیں اس سلسلے میں ہم آپ سے درخواست کرتے ہیں کہ براہ کرم ان پھلوں کے بیج اور گھٹلیاں کوڑے میں مت پھینکیں بلکہ ان کو دھو کر اپنی گاڑی وغیرہ میں رکھ لیں اور جب بھی کسی ایسی جگہ سے گزر ہو جہاں پر درخت وغیرہ نہ ہوں ان بیجوں اورگھٹلیوں کو وہاں پھینک دیں چند دنوں کے بعد برسات کا موسم اپنا رنگ دکھائے گا اور آپ کے پھینکے ہوئے ان بیجوں میں سے زیادہ تر اُگ آئیں گے اور اللہ کے فضل سے درخت بھی بن جائیں گے درخت نہ صرف صدقہ جاریہ ہے بلکہ اس وقت پاکستان اوردنیا کی سب سے بڑی ضرورت بھی ہیں ہمارا یہ چھوٹا سا عمل پاکستان کو ایک گرین اور پھلوں کا بادشاہ ملک بنانے کا پہلا قطرہ ثابت ہو گا اور یہ ایک ایسی سرمایہ کاری ہے کہ جس کا فائدہ ہ ہماری آئندہ آنے والی نسلوں کو ہو گا اور آخرت میں ہم کو ہوگا۔