کرونا لاک ڈاؤن کی آڑ میں حکیموں کو پریشان کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے

پنڈ دادنخان (ملک ظہیراعوان)کرونا لاک ڈاؤن کی آڑ میں حکیموں کو پریشان کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے۔ پاکستان طبی کانفرنس پنجاب کے جنرل سیکرٹری حکیم محمد احمد سلیمی ۔حکیم انعام اللہ ۔حکیم امجد وحید بBھٹی اور حکیم سید عمران فیاض نے ایک پریس بریفنگ میں اظہا خیال کرتے ہوئے کہا کہ حکیم /طبیب 1965 کے یونانی آئورویدک اینڈ ہومیو پیتھک پریکٹینرز ایکٹ کے تحت آئین طور پر علاج معالجہ کرنے کا قانونی حق رکھتے ہیں اس کے علاوہ پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن ایکٹ 2010 کے مطابق قانونی طور پر ہیلتھ کئیر پرووائڈر ہیں اور دیگر معالجین کی طرح مساوی حقوق کے حامل ہیں مگر پولیس اور انتظامیہ طب یونانی کے معالجین حکماء کے ساتھ بڑا توہین آمیز رویہ ااختیار کرتے ہیں اور گورنمنٹ کی جانب سے حاصل استثنی کو تسلیم کرنے سے نہ صرف انکار کردیتے ہیں بلکہ بڑا ہتک آمیز رویہ اختیار کرتے ہوئے ہراساں اور پریشان کرتے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلی پنجاب اور چیف سیکرٹری اس بات کا نوٹس لیں اور اطباء /حکیموں کے ساتھ ناروا اور غیر مساویانہ سلوک بند کروایا جائے۔ اور کرونا لاک ڈاؤن میں مریضوں سے ان کے دکھوں کا مداوا کرنے کا حق نہ چھینا جائے۔