لیبر یونٹی آف آئیسکو یونین سی بی اے نے آج چیف ایگزیکٹیو آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا

دینہ(سہیل انجم قریشی سے)
لیبر یونٹی آف آئیسکو یونین سی بی اے نے آج چیف ایگزیکٹیو آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے منافع بخش اداروں کی کسی بھی صورت میں آئی ایم ایف کے کہنے پر فروخت نہیں ہونے دیں گئے، اس موقع پرحشام کیانی چیئرمین لیبریونٹی ائیسکو سی بی اے دینہ2 نے کہا کہ نجکاری کےخلاف آج ہم تحریک کا آغاز کررہے ہیں، آئیسکو کے اندر ڈیلی ویجز، کنٹی ، جنٹس، کیچول لیبر اور کنٹریکٹ پر کام کرنے والے محنت کشوں کو حسب باقاعدہ ریگولر نہیں کیا جارہا جو کہ نہ صرف ظلم وزیادتی ہے بلکہ خلاف قانون بھی ہے ، ہمارا مطالبہ ہے کہ آئیسکو کے اندر کام کرنے والے محنت کشوں کو فلفور ریگولر کیا جائے ، اے ایل ایم کےساتھ بھرتی ہونے والے دیگر کیڈرریگولر ہوچکےہیں ان کےساتھ امتیازی سلوک کیوں ؟ مزید ہوشربا مہنگائی کے تناسب سے تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے یا پھر مہنگائی الاونس کا اجراء کیا جائے ، اگر مطالبات پورے نہ ہوئے تو احتجاج کا دائرہ پوری کمپنی میں پھیلا دیںگے اور کسی قسم کے نقصان کا ذمہ دار آئیسکو انتظامیہ ہوگی،مظاہرہ میں شمس الرحمن سواتی صدر نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان اور اگیگا کے چیف آرگنائز رحمان علی باجوہ نے بھی خطاب کیا۔