پرائس کنٹرول مجسٹریٹس سرکاری نرخوں پر اشیاء خوردونوش فروخت کروانے میں بری طرح ناکام

جہلم(چوہدری عابد محمود +عبدالغفارآذاد)کمشنر راولپنڈی ڈویژن گلزار حسین شاہ کے احکامات بھی نظر انداز، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس سرکاری نرخوں پر اشیاء خوردونوش فروخت کروانے میں بری طرح ناکام، گراں فروشوں نے من مرضی کے نرخ مقرر کر لئے، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی عدم دلچسپی کے باعث مہنگائی عروج پر پہنچ گئی، سبزی،پھل، دالیں اور گوشت غریب عوام کی پہنچ سے کوسوں میل دور، غریب عوام سراپا احتجاج،وزیراعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق کمشنر راولپنڈی ڈویژن گلزار حسین شاہ نے گزشتہ ہفتے ضلع جہلم کے دورہ کے موقع پر ضلع جہلم میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کے فرائض سرانجام دینے والے افسران کے ساتھ میٹنگ کے دوران ہدایات جاری کیں کہ روزانہ کی بنیاد پر بازاروں کے دورے کرکے اشیاء خوردونوش کے نرخوں کو سرکاری نرخ نامے کے مطابق عملدرآمد کروایا جائے اور شہر سمیت ضلع بھر میں گراں فروشو ں کے خلاف سخت کارروائیاں عمل میں لائی جائیں جس پر پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے شہریوں کو ریلیف فراہم کرنے کی بجائے خاموشی اختیار کر رکھی ہے جس کیوجہ سے دکانداروں نے سرکاری نرخ ناموں پر عملدرآمد کرنے کی بجائے من مرضی کے نرخ مقرر کرکے غریب صارفین کی چمڑیاں ادھیڑنا شروع کررکھی ہیں۔ دوسری جانب پرائس کنٹرول مجسٹریٹس گرانفروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائیاں کرنے کی بجائے سب اچھا ہے کی رپورٹس بجھوا کر ارباب اختیار کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں،جہلم کی چاروں تحصیلوں میں مہنگائی کیوجہ سے غریب عوام 2 وقت کی روٹی کو ترس رہے ہیں۔سبزیوں، پھلوں، دالوں اور گوشت سمیت اشیاء خودونوش کے بڑھتے ہوئے نرخوں کیوجہ سے شہری دالیں اور سبزیاں استعمال کرنے کو بھی ترستے دکھائی دیتے ہیں، سبزیوں کے ساتھ ساتھ بنیادی اشیاء جن میں دالیں گوشت، روٹی، نان، دودھ، دہی کی قیمتیں بھی مقررہ کردہ قیمتوں سے کئی گنا اضافی وصول کی جارہی ہیں۔ جبکہ پھلوں کی قیمتیں بھی دکانداروں نے ازخود بڑھا رکھی ہیں، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس دفتروں تک محدود ہو کر رہ گئے ہیں۔ شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع جہلم میں فرض شناس، ایماندار افسران کو تعینات کیاجائے جو روزانہ کی بنیاد پر بازاروں کے دورے کرتے ہوئے حکومتی نرخوں پر عملدرآمد کو یقینی بنا سکیں۔