جہلم شہرو گردونواح میں بجلی کی اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے عوام کی چیخیں نکال دیں

جہلم(چوہدری عابد محمود +چوہدری دانیال عابد)جہلم شہرو گردونواح میں بجلی کی اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کے عذاب نے صارفین کا جینا دوبھر کر دیا۔ شدید گرمی میں بزرگ،خواتین بچے نڈھال،کاروبار زندگی معطل، آئیسکو چیف نے بھی چپ کاروزہ رکھ لیا، شہریوں کاوزیر اعظم پاکستان، وفاقی وزیر پانی وبجلی سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق شدید گرمی اور حبس کے موسم میں شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں آئیسکو واپڈا نے اعلانیہ کے ساتھ ساتھ غیر اعلانیہ گھنٹوں کی لوڈ شیڈنگ شروع کررکھی ہے۔ بجلی کے وولٹیج میں بھی کمی بیشی کی وجہ سے شہری شدید پریشانی کا شکار ہیں اور کاروبار زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا ہے۔بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے صارفین شدید مشکلات کا شکار ہیں،صارفین کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ انتہائی کم وولٹیج اور بجلی کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے ہماری زندگیاں اجیرن اور کاروبار تباہ ہو کر رہ گئے ہیں۔ بجلی کی مسلسل، اعلانیہ وغیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی جا رہی ہے اور اگر بجلی آ بھی جائے تو وولٹیج بہت کم ہوتے ہیں۔ کم وولٹیج کے باعث بجلی سے منسلک کاروبار کے ساتھ ساتھ دوسرے کاروبار بھی شدید متاثر ہو رہے ہیں۔ دوسری طرف شہریوں کا کہنا ہے کہ شدید گرمی اور حبس میں اعلانیہ وغیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کسی عذاب سے کم نہیں۔ جبکہ انتہائی کم وولٹیج کی وجہ سے الیکٹرانکس مصنوعات بھی جل رہی ہیں، پانی کی موٹریں نہ چلنے کیوجہ سے پانی کی بھی قلت پیدا ہو چکی ہے۔کارروباری افراد سمیت شہریوں نے وزیراعظم پاکستان، وفاقی وزیر پانی وبجلی سمیت اعلی حکام سے اصلاح و احوال کا مطالبہ کیا ہے۔