مزدوروں کا عالمی دن گزر گیا ،گزشتہ دو سالوں سے بند ڈنڈوت سیمنٹ کے مزدوروں کی کسی نے خبرگیری تک نہ کی

پنڈدادنخان( ملک ظہیر اعوان)مزدوروں کا عالمی دن گزر گیا ،حلقہ این اے 67جہلم و حلقہ پی پی 27 پنڈدادنخان میں قائم گزشتہ دو سالوں سے بند ڈنڈوت سیمنٹ کے مزدوروں کی کسی نے خبرگیری تک نہ کی سرمایہ داروں نے کارخانے کا گھاٹا شو کرکے فیکٹری کو تالے لگا دئیےاور تمام مستقل مزدوروں کو نکال دیا اور بعد میں عدالتوں کو مطمئن کر کے عدالتوں سے بھی مزدوروں کی برطرفی کے آرڈر لے لیے جس کی وجہ سے آج ڈنڈوت سیمنٹ کے مزدور اور ان کے بچے دو وقت کی روٹی کو ترس رہے ہیں کوئی ان کا پرسان حال نہیں کارخانے داروں کا تعلق حکمران جماعت کے سرکردہ رشتہ داروں سے ہے جس کی وجہ سے پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والا کوئی بھی سیاستدان ڈنڈوت سیمنٹ کے مزدوروں سے ہمدردی کے دو بول بھی نہیں بول سکتا جبکہ پاکستان مسلم لیگ نون ،پاکستان پیپلز پارٹی اور دیگر اپوزیشن پارٹیوں کے رہنماؤں میں جرات اظہار کا شدید فقدان ہے وہ سب حکمران جماعت کا سامنا کرنے سے کتراتے ہیں جس کی وجہ سے ڈنڈوت سیمنٹ کے مزدور سیاسی طور پر لاوارث اور یتیم ہو چکے ہیں ان کا نہ تو کوئی والی وارث بن رہا ہے اور نہ ہی ان کا کوئی پرسان حال ہے انتخابات سے قبل یہ مزدور حکمران جماعت کے صف اول کے مجاہدوں میں شامل تھے