رمضان بازار سستی اشیاء مہیا کرنے کے بجائے غریب عوام کا خون چوسنے لگے

دینہ(ادریس چودھری سے)انتظامیہ کے احکامات کو دکانداروں نے یکسر مسترد کر دیا۔رمضان بازار سستی اشیاء مہیا کرنے کے بجائے وبائی مرض پھیلانے لگے تفصیلات کے مطابق رمضان کے ایک روز قبل کسی حد تک اشیاء خردنی غریب آدمی خرید سکتا تھا ٹماٹر 100 روپے کے 3 کلو میسر تھے اب 150 میں بھی نہیں ملتے خربوزہ 5 کلو 200 روپے میں ملتا تھا پیاز اور الو کا ریٹ 100 روپے 5 کلو تھا تمام اقسام کی سبزیاں 50 یا 60 روپے فی کلو مل سکتی تھیں اب رمضان بازار میں ان کا ریٹ آسمانوں تک پہنچ چکا ہے غریب لوگ رمضان بازار میں خریداری کے لیے جاتے ہیں بوجہ خور ساختہ مہنگائی خالی ہاتھ واپس آ جاتے ہیں چینی کا ریٹ بلاشبہ رمضان بازار میں سستا ہے دو کلو چینی حاصل کرنے کے لیے روزے کی حالت میں آپ کو چار گھنٹے لائن میں کھڑا ہونا ہوگا غریب اور متوسط طبقہ کے ساتھ اس قسم کا سلوک سمجھ سے بالاتر ہے کاش انتظامیہ عوام کی خادم بن کر فرائض منصبی سر انجام دیں۔