قصبہ ساؤوال کی مین گلی سے راہگیروں اور سکول کے بچوں کا گزرنا محال ہوگیا

پنڈ دادنخان +ٹوبھہ (رپورٹ ملک ظہیر اعوان)حلقہ این اے 67جہلم و حلقہ پی پی27 پنڈدادنخان کا معروف مثالی قصبہ ساؤوال کی مین گلی سے راہگیروں اور سکول کے بچوں کا گزرنا مشکل ہو چکا ہے،تجاوزات کی بھر مار ہو چکی ہے جبکہ نکاسی آب کا کوئی بندوبست نہ ہے، گلیوں اور نالیوں میں ڈالی جانے والی مٹی سے گندے پانی کی نکاسی مکمل بند ہو چکی ہے، ساؤوال کی یہ مین گلی ملحقہ گاؤں غریب وال سے ملتی ہے،غریب وال اور ساؤوال آنے جانے والے طلباطالبات کو شدید دشواری کا سامنا رہتا ہے،چار سکولوں کے بچے شدید متاثر ہیں،طلبا و طالبات کو سکول جانے کے لئے گندے جوہڑ اور دلدل سے گذر کر جانا پڑتا ہے، اکثر چھوٹے بچے سکول نہیں پہنچ سکتے رستے میں ہی گر جاتے ہیں اور یونیفارم خراب ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے گھرواپس لوٹنا پڑتا ہے، اس گلی سے گزر کرطلبا ایمان پبلک سکول، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول غریبوال، راج بخش ماڈل سکول اور گورنمنٹ ہائی سکول غریبوال کے بچے گزرتے ہیں یہ مین راستہ گندے پانی کی وجہ سے گندے جوہڑ میں تبدیل ہو چکا ہے،جس کے باعث سخت بدبو اور تعفن پھیلا ہوا ہے جس سے وبائی امراض پھوٹنے کا خدشہ ہے گندے پانی کی نکاسی کے لئے ڈی سی جہلم اور اسسٹنٹ کمشنر پنڈ دادنخان کو سخت نوٹس لینا چائیے۔