جی ٹی روڈ پر نجی اداروں نے سرکاری سڑکوں کو پارکنگ میں تبدیل کر لیا

جہلم(چوہدری عابد محمود +عامرکیانی)جہلم اولڈ جی ٹی روڈ سمیت اندرون شہر کی سڑکوں پر قائم نجی ہسپتالوں، تعلیمی اداروں، میرج ہالز، مارکیز، میرج گارڈنز کی انتظامیہ نے سرکاری سڑکوں کو پارکنگ میں تبدیل کر لیا، میونسپل کارپوریشن کے شعبہ انکروچمنٹ و ٹریفک پولیس کی خاموشی سوالیہ نشان بن گئی۔شہریوں کا سڑکوں پر قائم پارکنگ کے خاتمے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق اولڈ جی ٹی رو ڈ سمیت اندرون شہر کی سڑکوں پر قائم ہونے والے نجی ہسپتالوں، تعلیمی اداروں، میرج ہالز، مارکیز، میرج گارڈنز کے مالکان نے پارکنگ کے لئے جگہ مختص کرنے کی بجائے سڑکوں کو پارکنگ میں تبدیل کر رکھا ہے جس کیوجہ سے صبح و شام سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی ہونے کیوجہ سے موٹر سائیکل سواروں اور چھوٹی گاڑیاں گزارنے میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے، سڑکوں پر کھڑی ہونیوالی گاڑیوں کے ڈرائیورز گاڑیوں میں موجود رہنے کی بجائے دائیں بائیں ہو جاتے ہیں جس کی وجہ سے ایمبولنسسز، فائر بریگیڈ، ایمرجنسی پولیس سمیت شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، بااثر مالکان نے میونسپل کارپوریشن کے شعبہ بلڈنگ برانچ کے ساتھ معاملات طے کرنے بعد مختص کی گئی پارکنگ کو ختم کرکے عمارت کے اندر کمرے بنا لیتے ہیں اس طرح پارکنگ کے لئے مختص کی گئی جگہ سے بھی ماہانہ لاکھوں روپے کمروں کی مد میں وصول کئے جاتے ہیں۔ شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ میونسپل کارپوریشن کے شعبہ انکروچمنٹ کے عملے کی ملی بھگت سے بااثر مالکان نے کارروباری مراکز بغیر پارکنگ کے تعمیر کررکھے ہیں جو کہ شہریوں کے ساتھ سخت زیادتی ہے، محکمہ اینٹی کرپشن کے ذمہ داران کاروباری مراکز کی فائلیں چیک کرکے مالی بد عنوانی کا سبب بننے والے اہلکاروں و مالکان کے خلاف مقدمات درج کریں اور عمارتوں کو منہدم کرکے پارکنگ کے لئے جگہ چھڑوائی جائے تاکہ شہریوں کے مسائل میں کمی واقع ہو سکے۔